Saturday, August 13, 2022
Home acchi baten Izzat Ki Roti Aur Pakiza khana

Izzat Ki Roti Aur Pakiza khana

عزت کی روٹی اور پاکیزہ غذا

الحمد لله وحده، والصلاة والسلام على من لا نبي بعده، وبعد!

اللہ رب العالمین ہم سب کے خالق ہیں،

ہم سب کے اکیلے رازق ہیں، تاہم رزق کی فراہمی کے لیے اسباب رکھے ہیں،

انسان کو سمجھ بوجھ دی گئی، حمل ونقل کے ذرائع میسر کیے گئے،

امن بحال رکھا گیا تاکہ اس کی معیشت مستحکم رہے۔

انسان کو صرف روزی نہیں دی گئی بلکہ اس کی عزت اور احترام کا مکمل لحاظ رکھا گیا ہے،

طیب اور پاکیزہ غذا کا اہتمام کیا گیا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے فرمایا:

﴿وَلَقَدْ كَرَّمْنَا بَنِىٓ ءَادَمَ وَحَمَلْنَٰهُمْ فِى ٱلْبَرِّ وَٱلْبَحْرِ وَرَزَقْنَٰهُم مِّنَ ٱلطَّيِّبَٰتِ وَفَضَّلْنَٰهُمْ عَلَىٰ كَثِيرٍۢ مِّمَّنْ خَلَقْنَا تَفْضِيلًا﴾ (بني إسرائيل: 70).

قصہ ایک عفیفہ اور پاکدامن عورت کا

قرآنِ مجید میں ( مریم بنت عمران ) کا قصہ جا بجا مذکور ہے،

آپ کی ولادت کا ذکر ہے، عمدہ پروش کے نتیجے میں پاکیزہ اور بے داغ جوانی کا بیان ہے،

آپ کی عبدیت پر روشنی ڈالی گئی ہے،

آپ کے علم، رب کے وعدوں پر یقین اور مقامِ عالی کو اجاگر کیا گیا ہے،

آپ کے سجدوں اور دیگر عبادتوں کا بھی ذکر ہے،

اسی طرح آپ کی کچھ کرامات بھی بتائے گئے ہیں۔

آپ ایک خاتون ہیں، اور رب العالمین نے اس عظیم صنف ( عورت ) کو کسب ومعاش کی مسؤولیت نہیں دی ہے،

اس کو باپ پھر شوہر کے کسب سے جوڑ کر تکریم کی ہے۔

( مریم بنت عمران ) یتیمی کے ایام گزارتے ہوئے

زکریا علیہ السلام کے زیرِ پرورش پلی بڑھی۔

نبی کی تربیت، اور خود امراۃ عمران یعنی مریم کی ماں کے گود سے سیکھے عفت و پاکدامنی کے سبق کا یہ اثر رہا

کہ مریم نے اپنے لڑکپن اور جوانی پر حرف آنے نہیں دیا۔

غربت سے نمٹنے کے نام بر اپنی آبرو کا سودا نہیں کیا۔

صدیقہ کا دسترخوان

( مریم ) نے پاکیزگی کو بحال رکھا، اور رب نے اپنے وعدے

﴿وَيَرْزُقْهُ مِنْ حَيْثُ لَا يَحْتَسِبُ ۚ وَمَن يَتَوَكَّلْ عَلَى ٱللَّهِ فَهُوَ حَسْبُهُۥٓ ۚ إِنَّ ٱللَّهَ بَٰلِغُ أَمْرِهِۦ﴾ (الطلاق: 3)،

کے مطابق آپ کے دروازے پر عمدہ، طیب، عزت والی روزی پہنچادی۔ زکریا علیہ السلام کے پوچھنے پر جواب میں کہا:

﴿هُوَ مِنْ عِندِ ٱللَّهِ ۖ إِنَّ ٱللَّهَ يَرْزُقُ مَن يَشَآءُ بِغَيْرِ حِسَابٍ﴾ (آل عمران: 37).

صدیقہ عفیفہ کی ایک اور تکریم

رب کی حکمتِ بالغہ کے تحت جبریل علیہ السلام ( مریم ) کے گریبان میں پھونک ماری جس سے –

باذن اللہ – آپ کو حمل ٹہر گیا، در اصل یہ اعجازی تخلیق اللہ تعالیٰ کے ہاں طے شدہ تھی۔

( مریم علیہ السلام ) کی گود میں شیر خوار بچہ ہے، حالتِ نفاس میں ہیں،

نقل وحرکت میں نشاط کی کمی ہے، مستزاد یہ کہ آپ لوگوں سے بھی دور رہیں:

﴿فَٱنتَبَذَتْ بِهِۦ مَكَانًا قَصِيًّا﴾ (مريم: 22)۔

مگر اللہ تعالیٰ نے آپ کے لیے عزت والی روزی دی،

کسی کے سامنے ہاتھ پھیلانے سے بچائے رکھا،

کسی بشر کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑا،

ضعیف و ناتواں صنفِ نازک کی عزت میں رتی برابر کمی نہ ہوئی۔

اللہ تعالیٰ نے اکرام کرتے ہوئے، طیب اور مفید غذا کا بندوبست کیا، فرمایا:

﴿وَهُزِّىٓ إِلَيْكِ بِجِذْعِ ٱلنَّخْلَةِ تُسَٰقِطْ عَلَيْكِ رُطَبًا جَنِيًّا﴾ (مریم: 25).

مذکورہ آیتِ کریمہ کی روشنی میں اہلِ علم نے تفسیری معلومات کے علاوہ؛

علمی لطائف، تربیتی امور، بلاغی فوائد بھی بیان کیے ہیں، اس تحریر میں ایک بات کا ذکر کروں گا۔

( مریم علیہ السلام ) سے کہا گیا: تو کھجور کا تنا اپنی طرف ہلا،

وہ تجھ پر تازہ پکی ہوئی کھجوریں گرائے گا۔

غور طلب بات

یہاں قابلِ توجہ بات یہ ہے کہ درخت سے یا کسی بھی اوپری حصے سے پکا ہوا

پھل یا پکی ہوئی تازہ کھجوریں زمین پر گرتی ہیں

تو وہ اپنی اصل حالت میں نہیں ہوتی ہیں، چھلکا کھل جاتا ہے،

اس کی تری زمینی دھول، مٹی، گرد وغبار سب کو اپنے مغز کا حصہ بنا لیتی ہے۔

یوں اس کا ذائقہ، مٹھاس، نفاست سب فاسد ہو جاتی ہیں۔

مگر اللہ تعالیٰ نے مریم بنت عمران کی تکریم فرمائی، کھجوریں آپ کے ہلانے سے اوپر سے گرتی رہیں

مگر آپ کو ایسے ملتی گویا آپ نے اپنے ہاتھ سے کھجوریں توڑی ہوں۔

غور کریں رب کی اس تکریم پر: ﴿تُسَٰقِطْ عَلَيْكِ رُطَبًا جَنِيًّا﴾۔

اہل السنۃ والجماعۃ کے عقیدے ومنہج پر علامہ محمد بن احمد السفارینی (ت 1188ھ) رحمہ اللہ کی منظوم تالیف

( الدرة المضية في عقد أهل الفرقة المرضية ) جو علمی دنیا میں ( العقيدة السفارينية ) سے مشہور ہے،

کتاب کے پانچویں باب کی ایک فصل کا موضوع ( کراماتِ اولیاء ) ہے،

اس موضوع کے اشعار کی شرح میں شیخ محمد بن صالح ابن عثیمین رحمہ اللہ نے مریم بنت عمران کی کرامات کا بھی ذکر کیے ہیں۔

شیخ ابن عثیمین رحمہ اللہ مذکورہ آیت کریمہ سے متعلق فوائد میں (شرح العقيدة السفارينية: ص ٦٤٨ ) یہ بات لکھے ہیں:

فكان يسقط هذا الرطب اللين جدًا من مكانٍ عالٍ على الأرض ويبقى كما هو، وكأنه مخروف باليد.

وهذه آية خارقة للعادة، فالعادة أن الرطب إذا سقط من مثل هذا المكان تفتت وتمزَّق، لكن هذا بقي كأنه مخروف باليد.

آخری بات

واقعہ پڑھنے میں اچھا لگتا ہے، طبیعت خوش ہو جاتی ہے،

جی ہاں ایمان بھی بڑھ جاتا ہے، مگر ایک بات یہ بھی ہے

کہ قرآن کا اس واقعے کو بیان کرنے میں مقصد کیا ہے؟

مقصد یہ ہے کہ روزی اللہ تعالیٰ سب کو دیتے ہیں، جانور کو بھی دیتے ہیں،

مگر انسان کو روزی بھی ایسی کہ اس میں اس کی عزت اس کا احترام ملحوظ رکھا جاتا ہے۔

ہمیں چاہیے کہ محنت کریں، محنت درست طریقہ پر کریں،

ایمانداری اور سچائی کو ملحوظ رکھیں،

جھوٹ اور خیانت سے مجتنب رہیں تو روزی روٹی بھی ملے گی

عزت بھی حاصل ہوگی اور اجروثواب بھی ملے گا۔

بہتر کمائی اور مال کی کثرت کے نشے میں عبادتوں کو پامال کرنا،

تلاوتِ قرآن اور ذکر واذکار سے غفلت برتنا،

اس کے لیے لباس اور چہرے کا وضع قطع بگاڑ لینا،

بے پردگی اور اختلاط کو اپنی طرزِ زندگی بنا لینا،

اور سمجھنا کہ اب یہ سب ہوگا تو ہی جیب بھرے گا یہ سب جھوٹ ہے فریب ہے،

رب کا یہ وعدہ صرف ( مریم بنت عمران ) کے لیے خاص نہیں ہے،

بلکہ میرے اور آپ کے لیے بھی ہے، وہ وعدہ ہے:

﴿وَيَرْزُقْهُ مِنْ حَيْثُ لَا يَحْتَسِبُ ۚ وَمَن يَتَوَكَّلْ عَلَى ٱللَّهِ فَهُوَ حَسْبُهُۥٓ ۚ إِنَّ ٱللَّهَ بَٰلِغُ أَمْرِهِۦ﴾۔

RELATED ARTICLES

Cover up the faults of others

دوسروں کے عیبوں کی پردہ پوشی کیجیے۔ کوئی بھی انسان عیوب سے پاک نہیں ہےسب کے اندر...

Hajj on foot is a foolish and ignorant act

بعض حضرات شہاب (کیرالہ) کے پیدل سفرِ حج پر طرح طرح سے اعتراضات کررہے ہیں اور اس سفر کو بےوقوفانہ، جاہلانہ،...

Killed for blasphemy in Nigeria: ‘It felt like a spear pierced my heart’

نائیجیریا میں توہین مذہب کے الزام میں قتل: 'ایسا لگا جیسے نیزے نے میرے دل کو چھید دیا ہو'بند کریںڈیبورا سیموئل...

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Cover up the faults of others

دوسروں کے عیبوں کی پردہ پوشی کیجیے۔ کوئی بھی انسان عیوب سے پاک نہیں ہےسب کے اندر...

Hajj on foot is a foolish and ignorant act

بعض حضرات شہاب (کیرالہ) کے پیدل سفرِ حج پر طرح طرح سے اعتراضات کررہے ہیں اور اس سفر کو بےوقوفانہ، جاہلانہ،...

Killed for blasphemy in Nigeria: ‘It felt like a spear pierced my heart’

نائیجیریا میں توہین مذہب کے الزام میں قتل: 'ایسا لگا جیسے نیزے نے میرے دل کو چھید دیا ہو'بند کریںڈیبورا سیموئل...

A few advices! By following which a person can get close to Allah

چند نصیحتیں! جنہیں عمل کرکے انسان اللہ کا قرب حاصل کر سکتا ہے غصہ کبھی نہ کرنا...

Recent Comments

Translate »